7

اسکولوں ، کالجوں کے لئے مختصر نصاب تیار کیا گیا

کراچی (اسٹاف رپورٹر) محکمہ تعلیم سندھ نے رواں تعلیمی سال کے لئے اسکولوں اور کالجوں کے طلباء کے لئے مختصر نصاب کا مسودہ تیار کرلیا ہے کیونکہ کوویڈ 19 معاملات میں کمی کے بعد صوبہ 15 ستمبر سے مرحلہ وار تعلیمی اداروں کو کھولنے جارہے ہیں۔ جمعہ کو اطلاع دی۔

سکریٹری سندھ کی تعلیم نے اسکولوں اور کالجوں کے لئے الگ سے مختصر نصاب تیار کیے جو تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھولنے سے پہلے متعارف کرایا جائے گا۔

یہ بات سامنے آئی ہے کہ 11 ویں اور بارہویں جماعت کے (انٹرمیڈیٹ) طلباء کو سائنس ، ریاضی اور انگریزی کے 30 فی صد کورس پڑھائے جائیں گے ، جبکہ داخلہ لینے والے اساتذہ کے ل 40 سائنس ، ریاضی ، سندھی ، انگریزی کے 40 فیصد نصاب کی پیروی کی جائے گی۔ کلاس نویں اور دسویں (میٹرک) میں۔

نئے نصاب کی روشنی میں ، سائنس ، ریاضی اور انگریزی سمیت مضامین کے لئے کلاس 6 سے جماعت کے 8 (سیکنڈری سیکشن) کے طلبا کو 50 فیصد کورس آؤٹ لائنز پڑھائی جائیں گی۔ مزید یہ کہ کلاس اول سے کلاس 5 کے طلباء (پرائمری سیکشن) کے لئے خواندگی ، ریاضی اور عمومی علم کے مضامین کا 30 فیصد کورس آؤٹ لائن مکمل ہوگا۔

تعلیمی حکام نے مئی 2021 سے نیا تعلیمی سیشن شروع کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔

وزیر تعلیم سندھ کی حتمی منظوری کے بعد متعلقہ محکمہ کی جانب سے ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے ڈرافٹ نصاب کو اسکولوں اور کالجوں میں متعارف کرایا جائے گا۔

9 ستمبر کو ، سندھ کے وزیر تعلیم سعید غنی نے اعلان کیا تھا کہ 15 ستمبر سے شروع ہونے والے مراحل میں صوبہ بھر کے تعلیمی ادارے دوبارہ کھولیں گے۔

انہوں نے یونیورسٹیوں کا اعلان کیا تھا اور نو اور دس کلاس کا اجلاس 15 ستمبر سے دوبارہ شروع ہوگا جبکہ کلاس چھ سے آٹھ تک 22 ستمبر سے شروع ہوں گی اور پرائمری کلاسز 30 ستمبر سے شروع ہوں گی۔

وزیر نے کہا تھا کہ وہ مرحلہ وار تعلیمی اداروں کے دوبارہ افتتاح کیلئے مقررہ تاریخ سے ایک روز قبل کورونا وائرس کی صورتحال کا جائزہ لیں گے ، جبکہ روزانہ کی بنیاد پر تعلیمی اداروں کے معائنے کے لئے مانیٹرنگ کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ تمام طالب علموں ، اساتذہ اور عملے کے ممبروں کے لئے ماسک پہننا ، معاشرتی دوری کا مشاہدہ کرنا ، اور سینیٹائزر استعمال کرنا لازمی کردیا گیا ہے۔ فلو یا کھانسی والے طلبا کو اسکول میں داخل ہونے کی اجازت 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں