18

ایف بی آر نے ارکان پارلیمان کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی

اسلام آباد(آن لائن)ایف بی آر نے ارکان پارلیمان کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی۔

 ایف بی آر کاکہنا ہے کہ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے 2 لاکھ 94 ہزار117 روپے ٹیکس ادا کیاجبکہ سابق صدر اور شریک چیئرمین پیپلزپارٹی آصف زرداری نے 28 لاکھ 89 ہزار455 روپے ٹیکس ادا کیا۔

ایف بی آر کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما،اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز نے 87 لاکھ 5 ہزار368 روپے ٹیکس ادا کیا جبکہ قائد حزب اختلاف قومی اسمبلی اور ن لیگ کے صدر شہبازشریف نے 97 لاکھ 30 ہزار595 روپے ٹیکس ادا کیا۔

ایف بی آر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے 2 لاکھ 82 ہزار 449 روپے ٹیکس ادا کیا،نورعالم خان نے 30 ہزار458 روپے ٹیکس ادا کیا،عمر ایوب نے 2 کروڑ60 لاکھ 55 ہزار517 روپے ٹیکس ادا کیا،شاہ محمود قریشی نے ایک لاکھ 83 ہزار9 سو روپے ٹیکس ادا کیا،شیخ رشید نے 5 لاکھ 79 ہزار11 روپے ٹیکس ادا کیا

ایف بی آر کاکہناہے کہ اسد عمر نے 53 لاکھ 46 ہزار342 روپے ٹیکس ادا کیا،حماد اظہر نے 5 کروڑ94 لاکھ 42 ہزار700 روپے ٹیکس ادا کیا،ریاض فتیانہ نے 11 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا،فرخ حبیب نے ایک لاکھ 83 ہزار727 روپے ٹیکس ادا کیا،رانا ثنااللہ نے 13 لاکھ 88 ہزار275 روپے ٹیکس ادا کیا۔شاہد خاقان عباسی نے 24 کروڑ روپے سے زیادہ ٹیکس ادا کیاایم این اے نجیب ہارون نے 14 کروڑ روپے ٹیکس ادا کیا۔

راکین پارلیمنٹ کی جانب سے جمع کرائے گئے ٹیکس کی تفصیلات

اس پر ‏‎Sarfraz Raja‎‏ نے شائع کیا جمعہ، 18 ستمبر، 2020

ایف بی آر نے سینیٹ کے ارکان کی ٹیکس ڈائریکٹری بھی جاری کردی،سینیٹر فروغ نسیم نے 3 کروڑ51 لاکھ 35 ہزار روپے انکم ٹیکس دیا،سینیٹر فروغ نسیم پاکستان میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے والے سینیٹر ہیں ،سینیٹر طلحہ محمود نے 2 کروڑ 92 لاکھ 10 ہزار روپے انکم ٹیکس دیا، سینیٹر امام دین شوقین نے 97 لاکھ 99 ہزار روپے انکم ٹیکس دیا، چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے 13 لاکھ 63 ہزار روپے ٹیکس دیا،ڈاکٹر اشوک کمار نے 69 لاکھ 98 ہزار روپے انکم ٹیکس دیا، سینیٹر محسن عزیز نے 12 لاکھ 30 ہزار روپے انکم ٹیکس دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں